Tuesday September 06, 2016

 

 CONTENTS

 Home

 News

 Editorial

 Opinion

 Fauji's Diaries

 Story

 Letters

 Community/Culture

 PW Policy

Ashraf's Articles-1

Ashraf's Articles-2

Ashraf's Urdu Poem

About Us

 
 
 
 

The Life of Jinnah

 

 

صبح بخیرپاکستان

کے اشرف

 

اے میرے مجبور دیس

میں جانتا ہوں

تیرا وجود زخموں سے چور

پا بہ زنجیر

زندگی کی جدو جہد

میں مصروف

اپنوں اور پرایوں

کی چیرہ دستیوں کا

شکار

خون آلودہ چہرے کے ساتھ

ان قوتوں سے نبرد آزما ہے

جو نہیں چاہتیں

کہ تیری

منتظر آنکھیں

امید کی

 کوئی کرن دیکھیں

 

تیرے دھوپ سے جلتے

رخسار

کبھی ابر کرم کے نم

سے راحت پایں

 

تیرے سوکھے چشمے

اچھلنے لگیں

آب تازہ و شیریں کے

فوارے بن کر

 

تیرے گلشن کے مرجھاے

پھولوں پر

پھرسے نکھار آے

 

لیکن اے میرے مجبور دیس

میں جانتا ہوں

 

از پس کوہسار

خورشید نو کی کرنیں

آیا چاہتی ہیں

تیری پیشانی پہ بوسہ دینے

 

صبح بخیر

اے میرے مجبور دیس

صبح بخیر

 

برکلے، کیلیفورنیا

9 دسمبر2009

 

Pakistan Weekly - All Rights Reserved

Site Developed and Hosted By Copyworld Inc.