Tuesday September 06, 2016

 

 CONTENTS

 Home

 News

 Editorial

 Opinion

 Fauji's Diaries

 Story

 Letters

 Community/Culture

 PW Policy

Ashraf's Articles-1

Ashraf's Articles-2

Ashraf's Urdu Poem

About Us

 
 
 
 

The Life of Jinnah

 

 

کوئی ہے جو بادل سے کہے

کے اشرف

 

شاید اب کے

برسنے والی بارش سے

 

تر ہوں

ہماری خشک دھرتی کے

نم کے لیے

ترسے ہونٹ

 

شاید اب کے

برسنے والی بارش سے

 

ہمارے مرجھاے ہوے

پھولوں کے رخساروں کی

سرخی لوٹ آے

 

شاید اب کے

برسنے والی بارش سے

 

دھل جایں

خوں کے وہ دھبے

جن کو مٹانے کی خواہش میں

ہم خود مٹے جاتے ہیں

 

کوئی ہے

جو بادل سے کہے

 

ہماری دھرتی کے

نم کے لیے ترسے

 ہونٹوں کی خشکی

 

ہمارے مرجھاے ہوے

پھولوں کے رخساروں کی زردی

 

ہمارے درودیوار پر لگے

خوں کے دھبے

مٹانے کے لیے

 

آے

برسے

 

اور ہماری دنیا کو

جل تھل کردے

 

برکلے، کیلیفورنیا

11 نومبر2009

 

Pakistan Weekly - All Rights Reserved

Site Developed and Hosted By Copyworld Inc.