Tuesday September 06, 2016

 

 CONTENTS

 Home

 News

 Editorial

 Opinion

 Fauji's Diaries

 Story

 Letters

 Community/Culture

 PW Policy

Ashraf's Articles-1

Ashraf's Articles-2

Ashraf's Urdu Poem

About Us

 
 
 
 

The Life of Jinnah

 

 

 

مشرق سے ابھرنے والا سورج

کے اشرف

 

ہر صبح

مشرق سے ابھرتے

سورج سے

پوچھتا ہوں

 

اے راتوں کی تاریکی

مٹانے والے

 

اے سرد جسموں کو

حرارت دینے والے

 

اے سمندروں کے پانی کو

ابر بنا کر

برسانے والے

 

اے گلشنوں میں

خزاوں کو بہار

اور بہاروں کوخزاں

بنانے والے

 

جس رب کے حکم سے

یہ سب کرتے ہو

 

اس سے پوچھو

کچھ بے بس انسانوں کی

غم کی رات

کیوں نہیں ڈھلتی؟

 

کچھ یخ بستہ

 جسموں کی سردی

کیوں نہیں مٹتی؟

 

کچھ لوگوں کی زندگیوں سے

پت جھڑ کا موسم

کیوں ختم نہیں ہوتا؟

 

ہر صبح

مشرق سے ابھرنے والا

سورج

 

بن کچھ کہے

 

مغربی کوہسار کی چوٹی

سے ٹکرا کر

 

ریزہ ریزہ ہو جاتا ہے

آسماں کی وسعتوں میں

کھو جاتا ہے

شب بھر کے لیے

سو جاتا ہے

 

15 اکتوبر 2009

برکلے، کیلیفورنیا

  

Pakistan Weekly - All Rights Reserved

Site Developed and Hosted By Copyworld Inc.