Tuesday September 06, 2016

 

 CONTENTS

 Home

 News

 Editorial

 Opinion

 Fauji's Diaries

 Story

 Letters

 Community/Culture

 PW Policy

Ashraf's Articles-1

Ashraf's Articles-2

Ashraf's Urdu Poem

About Us

 
 
 
 

The Life of Jinnah

 

 

 

رقص کرو

کے اشرف

 

رقص کرو

یہ رقص ہے موت و حیات کا

یہ رقص ہے کائنات کا

اس رقص سے کیسے مفر کرو گے؟

اٹھو تم بھی رقص کرو

رقص کرو، رقص کرو

رقص کرو

 

ہے چمن میں لالہ و گل کی بہار

آسماں سے برس رہی ہے پھوار

رقص میں ہیں وادی و کوہسار

اٹھو تم بھی رقص کرو

رقص کرو، رقص کرو

رقص کرو

 

اس سے پہلے کہ خزاں آے

اس سے پہلے کہ پھول زرد پڑنے لگیں

اس سے پہلے کہ اشجار کے پتے

چرمرا کر جھڑنے لگیں

اٹھو تم بھی رقص کرو

رقص کرو، رقص کرو

رقص کرو

 

ہاتھوں کے ساتھ ہاتھ ہلیں

کولہوں کے ساتھ کولہے ہلیں

بھر جاے رنگ و نور سے دنیا

خواہشوں کے ساتھ خواہشیں ملیں

اور رقص زیست

 یونہی چلتا رہے

 

اٹھو تم بھی رقص کرو

رقص کرو، رقص کرو

رقص کرو

 

11ستمبر2009

 

 

  

Pakistan Weekly - All Rights Reserved

Site Developed and Hosted By Copyworld Inc.